اب کے ہم پر کیسا سال پڑا لوگو

Go down

اب کے ہم پر کیسا سال پڑا لوگو

Post by .eXe on Sun Jan 08, 2012 3:24 am

اب کے ہم پر کیسا سال پڑا لوگو
شہر میں آوازوں کا کال پڑا لوگو

ہر چہرہ دو ٹکڑوں میں تقسیم ہوا
اب کے دلوں میں ایسا بال پڑا لوگو

جب بھی دیار خندہ دلاں سے گزرے ہیں
اس سے آگے شہر ملال پڑا لوگو

آئے رت اور جائے رت کی بات نہیں
اب تو عمروں کا جنجال پڑا لوگو

تلخ نوائی کا مجرم تھا صرف فراز
پھر کیوں سارے باغ پہ جال پڑا لوگو

.eXe

Posts : 3
Points : 9
Join date : 2012-01-08

Back to top Go down

Back to top


 
Permissions in this forum:
You cannot reply to topics in this forum